ڈیلی آرکائیو

2019-08-24

اس نے سکوتِ شب میں بھی اپنا پیام رکھ دیا ہجر کی را…

اس نے سکوتِ شب میں بھی اپنا پیام رکھ دیا ہجر کی رات بام پر ماہِ تمام رکھ دیا آمدِ دوست کی نوید کوئے وفا میں گرم تھی میں نے بھی اک چراغ سا دل سرِ شام رکھ دیا شدتِ تشنگی میں بھی غیرتِ میکشی رہی اس نے جو پھیرلی نظر میں نے بھی جام رکھ دیا…

میں تو مقتل میں بھی قسمت کا سکندر نکلا احمد فراز …

میں تو مقتل میں بھی قسمت کا سکندر نکلا احمد فراز میں تو مقتل میں بھی قسمت کا سکندر نکلا قرعۂ فال مرے نام کا اکثر نکلا تھا جنہیں زعم وہ دریا بھی مجھی میں ڈوبے میں کہ صحرا نظر آتا تھا سمندر نکلا میں نے اس جان بہاراں کو بہت یاد کیا…

حیات لے کے چلو کائنات لے کے چلو چلو تو سارے زمانے …

حیات لے کے چلو کائنات لے کے چلو چلو تو سارے زمانے کو ساتھ لے کے چلو ... مخدوم محی الدین کی برسی August 25, 1969 ترقی پسند شاعر مخدوم محی الدین۔مخدوم نے 4 فروری 1908ء کو حیدر آباد دکن کے ایک غریب گھرانے میں جنم لیا۔ یہ تلنگانہ کا ضلع…

تمام خلق کا خدمت گزار ہے پانی ….. مرثیہ نسیم امر…

تمام خلق کا خدمت گزار ہے پانی ..... مرثیہ نسیم امروہوی 1 تمام خلق کا خدمت گزار ہے پانی رگوں میں خون بدن میں نکھار ہے پانی گلوں میں حسن چمن میں بہار ہے پانی نمو کی بزم میں پروردگار ہے پانی نگاہ خلق سے غائب جو ہے فضاؤں میں امام غیب…

جانے کب ہوں گے کم اِس دُنیا کے غَم جِینے والوں پہ …

جانے کب ہوں گے کم اِس دُنیا کے غَم جِینے والوں پہ سدا بے جُرم و خطا ہوتے آۓ ہیں سِتَم کِیا جِس نی گِلہ مِلی اور سزا کئی بار ہُوا یہاں خُونِ وفا بس یہی ہے صِلَہ دِل والوں نے دیا یہاں دار پہ دَم جانے کب ہونگے کم اِس دُنیا کے غَم کوئی آس…

جو بلند بامِ حروف سے، جو پرے ہے دشتِ خیال سے وہ …

جو بلند بامِ حروف سے، جو پرے ہے دشتِ خیال سے وہ کبھی کبھی مجھے جھانکتا ہے غزل کے شہرِِ جمال سے میں کروں جو سجدہ تو کس طرف کہ مرا وہ قبلہْ دید تو کبھی شرق و غرب سے جلوہ گر ہے کبھی جنوب و شمال سے ابھی رات باقی ہے قصہ خواں،وہی قصہ پھر سے…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…