ڈیلی آرکائیو

2020-05-12

( اندھیر نگری، از سعادت حسن منٹو ) ایک دفعہ عبدال…

( اندھیر نگری، از سعادت حسن منٹو ) ایک دفعہ عبدالمجید سالک اور حکیم فقیر محمد چشتی صاحب موچی دروازے کے اندر ایک امام باڑے میں میر بہادر حسین ارم لکھنوی کا مرثیہ سننے گئے۔ ابھی مجلس شروع نہ ہوئی تھی اور ایک جانب بر آمدے میں کچھ طوائفیں جمع…

"اے آزادی! میں ناانصافی سے بیزار ہوں مجھے قید سے…

"اے آزادی! میں ناانصافی سے بیزار ہوں مجھے قید سے کوفت ہوتی ہے مجھے زنجیروں (فرسودہ روایات کی زنجیریں) سے نفرت ہے مجھے زندان ناپسند ہے میں حکومت سے بیزار ہوں میں "ضرور" کی منطق سے بیزار ہوں مجھے ہر اس شخص سے اور ہر اس چیز سے نفرت ہے جو…

پھر یوں ہوا کہ خیر سے گھر لوٹتے ہوئے آنکھیں خرید …

پھر یوں ہوا کہ خیر سے گھر لوٹتے ہوئے آنکھیں خرید لیں کسی اندھے فقیر سے ... نظم : شاپنگ بے شک تھی شاہ کار گلہری میں گھاس تھی گڑیا نہ لی کہ وہ تو فقط خوش لباس تھی تصویر بولتی سہی ، تصویر ہی تو تھی چینی کا تاج خوب تھا ، نا پائدار تھا تھا…