ماہانہ آرکائیو

اکتوبر 2020

محبت ایک راز خداوندی ہے، جس کا تمام لوگوں کی نگاہو…

محبت ایک راز خداوندی ہے، جس کا تمام لوگوں کی نگاہوں سے پوشیدہ رہنا ضروری ہے، چاہے جو بھی ہوجائے، اس کے خلاف کتنی ہی ہوائیں چل جائیں وہ بہتر اور پائیدار رہے گی، وہ عظیم ترین اور مقدس ترین رہے گی۔ __دوستو وسکی نوٹس فرام انڈر گراؤنڈ مترجم:…

بورخیس کو پڑھنا ایک بلکل نئے جہان کی سیر کے مترادف…

بورخیس کو پڑھنا ایک بلکل نئے جہان کی سیر کے مترادف ہے۔اس جہان میں قدم قدم پر آپ کا سامنا تحیر سے پر اور چکرا دینے والے واقعات سے ہوتا ہے۔کبھی کبھی سادہ مگر گھنے بیانہ پر تجرید کا اچانک حملہ ہمیں سنبھلنے کا موقع تک نہیں دیتا۔ یہاں زمان…

قدم قدم پہ عجب حادثاتِ غم گزرے جہاں جہاں سے …

قدم قدم پہ عجب حادثاتِ غم گزرے جہاں جہاں سے تری جستجو میں ہم گزرے غمِ حیات کو لے کر جدھر سے ہم گزرے ہجومِ حادثۂ نو بہ نو بہم گزرے نہ راس آئے مری زندگی مجھے اے دوست کبھی گراں جو مرے دل پہ تیرا غم گزرے قدم قدم پہ ہوا امتحانِ…

حقیقی بحران فرانسیسی اقدار ہیں نہ کہ اسلام – أمیرہ عبدالفتاح

اسلام اور مسلمانوں کے خلاف ایمانویل ماکرون کی متشددانہ تحریک اچانک سے سامنے نہیں آئی بلکہ یہ فرانسیسی نسل پرستی کی پیداوار ہے جسکی جڑیں فرانسیسی نفسیات میں پیوست ہیں۔ بحران در اصل فرانسیسی اقدار کا ہے نہ کہ اسلام کا۔فرانس ایک سیکولر…

ذرہ سا افغان ادب سے ـ جب میں افغانی ادب میں افغان…

ذرہ سا افغان ادب سے ـ جب میں افغانی ادب میں افغانی ادیب ’سپوژمے زریاب‘ کا لکھا افسانہ ”فرشتے کا شکار“ پڑھ رہا تھا تو میں تنگ برقعے میں لپٹی حسین و جمیل لڑکی کے تصور میں چلا جاتا ہوں جس کی چاہتیں اور ضرورتیں، امنگ، سوز و ساز، عشق و محبت…

غریب شہر تو فاقے سے مر گیا عارفؔ* *امیر شہر نے ہی…

غریب شہر تو فاقے سے مر گیا عارفؔ* *امیر شہر نے ہیرے سے خودکشی کر لی ... عارفؔ_شفیق کا یومِ ولادت October 31, 1956 عارف شفیق عارفؔ نے31؍اکتوبر 1956ء کو کراچی میں آنکھ کھولی۔ یہ شفیق بریلوی کے فرزند ہیں۔ صحافت کے پیشے سے وابستہ ہیں۔ عارف…

خطرے میں خود پہرے دار کی جان نہ ھو گھر ھو لیکن ات…

خطرے میں خود پہرے دار کی جان نہ ھو گھر ھو لیکن اتنا عالی شان نہ ھو اور تو سارے دکھ مجھ کو منظور وفا مولا میرا بیٹا نافرمان نہ ھو ۔۔۔۔ ! ... وفا حجازی کا یومِ وفات October 31, 1984 وفا حجازی کا اصل نام عطاء الرحمٰن تھا ۔ آپ کی والدہ محترمہ…

امرتا پریتم کی وفات October 31, 2005 اج آکھاں وا…

امرتا پریتم کی وفات October 31, 2005 اج آکھاں وارث شاہ نوں کتوں قبراں وچوں بول تے اج کتابِ عشق دا کوئی اگلا ورقہ پھول آج پنجابی زبان کی معروف ناول نگار ، ادیب اور شاعرہ امرتا پریتم کا یومِ وفات ھے تاریخ پیدائش :31 اگست 1919ء گوجرانوالا…