ڈیلی آرکائیو

2020-11-19

نہیں نگاہ میں منزل تو جستجو ہی سہی فیض احمد فیض …

نہیں نگاہ میں منزل تو جستجو ہی سہی فیض احمد فیض نہیں نگاہ میں منزل تو جستجو ہی سہی نہیں وصال میسر تو آرزو ہی سہی نہ تن میں خون فراہم نہ اشک آنکھوں میں نماز شوق تو واجب ہے بے وضو ہی سہی کسی طرح تو جمے بزم مے کدے والو نہیں جو بادہ و…

مصنف : Leo Tolstoy – اگر کوئی سمجھ دار عقلمند اور…

مصنف : Leo Tolstoy - اگر کوئی سمجھ دار عقلمند اور تعلیم یافتہ خوش و خرم رہنا چاہتا ہے ، تو اسے چاہیے شادی کر لے لیکن حیوانی جذبات کی تکمیل کے لئے نہیں بلکہ ایک خاص مقصد کو مدِ نظر رکھ کر یعنی شادی سے بیشتر یہ اندازہ لگا لیں کہ اسکی بیوی…

ہمیں سے انجمن عشق معتبر ٹھہری ہمیں کو سونپی گئی …

ہمیں سے انجمن عشق معتبر ٹھہری ہمیں کو سونپی گئی غم کی پاسبانی بھی .... مڑ کے دیکھا تو ہمیں چھوڑ کے جاتی تھی حیات ہم نے جانا تھا کوئی بوجھ گرا ہے سر سے .. لٹا کے دولت نایاب یہ سزا پائی قدم قدم پہ ہمیں ڈس رہی ہے تنہائی ... زاہدہ زیدی…

( غیر مطبوعہ ) رنگ اور نور سے خالی آگ ٹھنڈی آ…

( غیر مطبوعہ ) رنگ اور نور سے خالی آگ ٹھنڈی آگ! مثالی آگ سرد ہوائیں کہتی تھیں روشن ہوجا، سالی آگ تھا کوئی سات سمُندر پار ہم نے آگ منگالی، آگ! پھر سے تازہ ہوگئی ہے برسوں دیکھی بھالی آگ ہم نے نقلی لکڑی سے آگ جلالی، جعلی…

مرد کو درد ہوتا ہے – فارینہ الماس

لوگ کہتے ہیں کہ ”مرد کو درد نہیں ہوتا“, ”مرد مضبوط اعصاب کے مالک ہوتے ہیں اس لئے بڑی بڑی تکلیفوں کو بھی سہہ جانے کا حوصلہ رکھتے ہیں“ معاشرے میں بہادری اور شجاعت کو مرد سے ہی منسوب کیا جاتا ہے اسی لئے جب کسی کی ہمت کو داد دینا ہو تو کہا…

ہمارا عمومی رویہ اسی سوچ کا عکاس ہے "برائی پر تنق…

ہمارا عمومی رویہ اسی سوچ کا عکاس ہے 🙁 "برائی پر تنقید کا مؤثر ترین طریقہ اس کی سرِعام تضحیک ھے۔ لوگ خود پر تنقید تو برداشت کر سکتے ھیں، اپنی تضحیک نہیں۔ وہ برا کہلوانا تو برداشت کر سکتے ھیں، لیکن انہیں احمق دکھائی دینے سے نفرت ھے۔" ژاں…

1. یہ جان لینے کے بعد کہ زندگی کس قدر نا قابل پیش …

1. یہ جان لینے کے بعد کہ زندگی کس قدر نا قابل پیش گوئی ہے، ایسانقطہ نظر جو ہر چیز کو درست اورمکمل دیکھنا چاہتا ہے، صرف تباہی کا نسخہ ہی ہوسکتا ہے ۔آپ تکمیل پرستی سے آزاد ہوسکتے ہیں اور اپنے معیار کو نیچے نہ لانے کے باوجود اپنی توقعات کو…

خزاں کی رُت میں گلاب لہجہ، بنا کے رکھنا، کمال یہ ہ…

خزاں کی رُت میں گلاب لہجہ، بنا کے رکھنا، کمال یہ ہے ہوا کی زد پہ دِیا جلانا، جَلا کے رکھنا، کمال یہ ہے ذرا سی لغزش پہ، توڑ دیتے ہیں سب تعلق زمانے والے سو ایسے ویسوں سے بھی تعلق بنا کے رکھنا، کمال یہ ہے کسی کو دینا یہ مشورہ کہ، وہ دُکھ…