ڈیلی آرکائیو

2021-01-14

بشکریہ https://www.facebook.com/groups/1876886402541884/permalink/2985060395057807

بنائیں گے نئی دنیا ہم اپنی تری دنیا میں اب رہنا ن…

بنائیں گے نئی دنیا ہم اپنی تری دنیا میں اب رہنا نہیں ہے ... شمس الرحمٰن فاروقی کا یومِ پیدائش January 15, 1936 ڈاکٹر شمس الرحمن فاروقی، ۱۵؍جنوری۱۹۳۶ء کو پرتاب گڑھ یوپی (بھارت) میں پیدا ہوئے۔ الٰہ آباد یونیورسٹی سے ۱۹۵۳ء میں انگریزی میں…

پاکستانی نصاب تعلیم : فیمنسٹ ماہرین کے نرغے میں ۔۔۔۔ وحید مراد

مغرب کی استعماری طاقتوں نے جب مشرق وسطیٰ، افریقہ اور جنوبی ایشیا کے ممالک پر سیاسی اور فوجی طاقت کے ذریعے قبضہ کیا تو انہیں احساس ہوا کہ مسلمانوں کو انکی مضبوط دینی اور تہذیبی روایات کی وجہ سے مستقل طور پر غلام بنانا آسان نہیں۔ چنانچہ…

کہانیاں اسی طرح جنم لیتی ہیں۔۔۔ کسی اہم، غیر متوقع…

کہانیاں اسی طرح جنم لیتی ہیں۔۔۔ کسی اہم، غیر متوقع موڑ کے ساتھ۔۔ مسرت کی صرف ایک قسم ہے جبکہ بدقسمتی ہر طرح اور ہر حجم میں آتی ہے۔۔۔ بلکل ویسے ہی جیسے ٹالسٹائی نے کہا تھا : مسرت ایک تمثیل ہے لیکن المیہ ایک کہانی۔۔!! •••• ناول : کافکا بر…

رام ریاض۔۔۔۔ رام ریاض کب پیدا ہُوئے۔۔۔کہاں پیدا ہ…

رام ریاض۔۔۔۔ رام ریاض کب پیدا ہُوئے۔۔۔کہاں پیدا ہوئے۔۔۔ کب وفات پائی۔۔۔اس بارے میں تو آپ دیگر احباب کی تحریریں ملاحظہ فرما چکے ہوں گے ہم آپ کو۔۔۔رام ریاض کے متعلق۔۔۔کچھ اور بتاتے ہیں۔۔۔ہم نے اپنی تشکیک کو ۔۔۔۔ خانےوال کے جناب منظور علی کی…

مری غزل میں تھیں اس کی نزاکتیں ساری اسی کے رُوئے…

مری غزل میں تھیں اس کی نزاکتیں ساری اسی کے رُوئے حسیں کی صباحتیں ساری وہ بولتا تھا تو ہر اک تھا گوش بر آواز وہ چپ ہوا تو ہیں بہری سماعتیں ساری وہ کیا گیا کہ ہر اک شخص رہ گیا تنہا اسی کے دم سے تھیں باہم رفاقتیں ساری ڈبو گیا وہ…

ہاروکی موراکامی کے مشہور ناول "کافکا بر لبِ س…

ہاروکی موراکامی کے مشہور ناول "کافکا بر لبِ ساحل " (Kafka on the shore) سے کچھ اقتباساتمترجم: نجم الدین احمد"بعض اوقات قسمت رَیت کے ایک چھوٹے سے طوفان کے مانند ہوتی ہے جو سمتیں بدلتا رہتا ہے۔ تم سمت تبدیل کرتے ہو لیکن طوفان…

بشکریہ https://www.facebook.com/groups/1876886402541884/permalink/2985148255049021

حفیظ جالندھری کا یومِ پیدائش January 14, 1900 من…

حفیظ جالندھری کا یومِ پیدائش January 14, 1900 منتخب اشعار حفیظ جالندھری ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ حفیظ اہل زباں کب مانتے تھے بڑے زوروں سے منوایا گیا ہوں ۔۔۔ دیکھا جو کھا کے تیر کمیں گاہ کی طرف اپنے ہی دوستوں سے ملاقات ہو گئی ۔۔۔ تشکیل و تکمیل فن…

اب جس طرف سے چاہے گزر جائے کارواں ویرانیاں تو سب…

اب جس طرف سے چاہے گزر جائے کارواں ویرانیاں تو سب مرے دل میں اتر گئیں ... گر ڈوبنا ہی اپنا مقدر ہے تو سنو ڈوبیں گے ہم ضرور مگر ناخدا کے ساتھ .... پیڑ کے کاٹنے والوں کو یہ معلوم تو تھا جسم جل جائیں گے جب سر پہ نہ سایہ ہوگا .... جس طرح…