ڈیلی آرکائیو

2021-01-18

وہ ہوچکا تھا وطن سے غافل وہ زر پرستوں کے کام آیا …

وہ ہوچکا تھا وطن سے غافل وہ زر پرستوں کے کام آیا جسے نہ تھی کچھ وطن کی قیمت اسی کے ہاتھوں نظام آیا ... صغر ا عالم کا یومِ پیدائش اصلی نام صغرا بیگم۔ اٹھارہ جنوری، 1938پیدائش۔ گلبرگہ، کرناٹک۔ ان کے سات شعری مجموعے شائع ہوچکے ہیں -…

گابریئل گارسیا مارکیز بیسویں صدی کا ایک ایسا طلسما…

گابریئل گارسیا مارکیز بیسویں صدی کا ایک ایسا طلسماتی لکھاری ہے جس کی تحریروں نے پوری دنیا کے فکشن کو متاثر کیا۔۔۔ اس کا ناول " تنہائی کے سو سال " بلاشبہ ایک ایسا شاہکار ہے جسے دنیا شاید ہی کبھی بھول پائے۔۔ اس… More ناول کے بارے میں میلان…

( غیر مطبوعہ ) آنچل میں نظر آتی ہیں کچھ اور سی آن…

( غیر مطبوعہ ) آنچل میں نظر آتی ہیں کچھ اور سی آنکھیں چھا جاتی ہیں احساس پہ بلّور سی آنکھیں رہتی ہے شب و روز میں بارش سی تری یاد خوابوں میں اُتر جاتی ہیں گھنگھور سی آنکھیں پیمانے سے پیمانے تلک بادہٗ لعلیں آغاز سے انجام تلک دَور سی…

چلے گئے ہو سکون و قرارِ جاں لے کر ہم اپنے درد …

چلے گئے ہو سکون و قرارِ جاں لے کر ہم اپنے درد کو جائیں کہاں کہاں لے کر بہت دنوں میں ملا ہے پیامِ موسمِ گُل نسیمِ صبح چلی ہے کشاں کشاں لے کر اب اپنے اپنے مقدر پہ بات ٹھہری ہے اٹھا ہے ابرِ گُہر بار بجلیاں لے کر یہاں نہ میں…

( غیر مطبوعہ ) پھر مجھ سے چُھپے کس لیے افزائشِ دن…

( غیر مطبوعہ ) پھر مجھ سے چُھپے کس لیے افزائشِ دنیا ہاتھوں میں ہوئی ہے مِرے پیدائشِ دنیا درویش کی عادات میں اک یہ بھی ہے شامل پوری نہیں کرتا کبھی فرمائشِ دنیا کوشش تو بہت کی ترے دستور نے لیکن نکلی نہیں دل میں مِرے گنجائشِ دنیا…

میں ایٹمی اسلحے کے عدم پھیلاو اور ایٹمی آزمائشوں پ…

میں ایٹمی اسلحے کے عدم پھیلاو اور ایٹمی آزمائشوں پر پابندی لگانے کے ہر اس دستاویز پر دستخط کرنے کو تیار ہوں جو دستخط کےلئے موجود ہو. میں نقل مکانی کرنے والوں کو خوش آمدید کہتی ہوں. آپ لوگ میرے پرچم کا ڈیزائن تیار کرنے میں میری مدد کرسکتے…

حیراں ہوں زندگی کی انوکھی اُڑان پر پاؤں زمین پر ہ…

حیراں ہوں زندگی کی انوکھی اُڑان پر پاؤں زمین پر ہیں مزاج آسمان پر یہ زخم تو ملا تھا کسی اور سے مجھے کیوں شکل تیری بننے لگی ہے نشان پر؟ چھوٹا سا اک چراغ بجھانے کے واسطے ٹھہری رہی ہے رات مرے سائبان پر میں راستوں میں اُس کا لگاؤں کہاں سراغ؟…

"آج کی رات" دیکھنا، جذبِ محبت کا اثر، آ…

"آج کی رات" دیکھنا، جذبِ محبت کا اثر، آج کی رات​ میرے شانے پہ ہے اُس شوخ کا سر آج کی رات​ ​ اور کیا چاہیے اب اے دلِ مجرُوح تجھے!​ اُس نے دیکھا تو بہ اندازِ دِگر آج کی رات​ ​ پُھول کیا، خار بھی ہیں آج گُلِستاں بکنار!​ سنگ ریزے…

ہرلَحظَہ ہے مومِن کی نئی شان نئی آن گُفتار میں کِ…

ہرلَحظَہ ہے مومِن کی نئی شان نئی آن گُفتار میں کِردار میں اللہ کی بُرہان قہاری و غَفّاری و قُدُّوسی و جَبرُوت یہ چار عناصِر ہوں تَو بَنتا ہے مُسَلمان ہَمسایۂ جِبریلِ اَمیں بَندۂ خاکی ہے اِس کا نَشیمن نہ بُخارا نہ بَدَخشان یہ راز کِسی کو…