ڈیلی آرکائیو

2021-02-12

گلوں میں رنگ بھرے، بادِ نو بہار چلے – فیض احمد فیض…

گلوں میں رنگ بھرے، بادِ نو بہار چلے - فیض احمد فیض گلوں میں رنگ بھرے، بادِ نو بہار چلے چلے بھی آؤ کہ گلشن کا کاروبار چلے قفس اداس ہے یارو، صبا سے کچھ تو کہو کہیں تو بہرِ خدا آج ذکرِ یار چلے کبھی تو صبح ترے کنجِ لب سے ہو آغاز کبھی تو شب…