ڈیلی آرکائیو

2021-03-08

رات گہری ہے تو پھر غم بھی فراواں ہوں گے ساجدہ زید…

رات گہری ہے تو پھر غم بھی فراواں ہوں گے ساجدہ زیدی (1927-2011) رات گہری ہے تو پھر غم بھی فراواں ہوں گے کتنے بجھتے ہوئے تارے سر مژگاں ہوں گے قہر ہے ساعت محشر ہے کہ کہرام فنا خاک اس شہر فنا کوش میں انساں ہوں گے شہر ہو دشت ہو محفل ہو کہ…

ایک عالم ہے یہ حیرانی کا جینا کیسا بلقیس ظفیر الح…

ایک عالم ہے یہ حیرانی کا جینا کیسا بلقیس ظفیر الحسن ایک عالم ہے یہ حیرانی کا جینا کیسا کچھ نہیں ہونے کو ہے اپنا یہ ہونا کیسا خون جمتا سا رگ و پے میں ہوئے شل احساس دیکھے جاتی ہے نظر ہول تماشا کیسا ریگزاروں میں سرابوں کے سوا کیا ملتا یہ تو…

ایک دفعہ کسی آدمی نے گوتم بدھ سے گالم گلاچ کی۔ گوت…

ایک دفعہ کسی آدمی نے گوتم بدھ سے گالم گلاچ کی۔ گوتم سکون سے سنتا رہا اور آخر میں کہنے لگا”بیٹا!اگر کوئی کسی کو تحفہ دے،لیکن وہ آدمی تحفہ لینے سے انکار کردے تو یہ تحفہ کس کا ہوا؟“ ”یہ تحفہ دینے والے کا ہی… More ہوگا“۔اس آدمی نے جواب دیا۔…

​شعر مر زا غالب کا، نظم ستیہ پال آنند کی اور تبصرہ شمس الرحمن فاروقی کا

شعر، مرزا غالبیک قلم کاغذ ِ آتش زدہ ہے صفحہ ء دشتنقش ِ پا میں ہے تپِ گرمی ء رفتار ہنوز نظم، ستیہ پال آنندکس قدر شعلہ بجاں ہے دم ِ تخلیق کا کربآگ  اگلتا ہوا یہ آپ کا قُقنس نامہنطقہ ء حارہ ہے یا آتش ِ آذر کی ہے آنچآپ کیا…

رات گہری ہے تو پھر غم بھی فراواں ہوں گے ساجدہ زید…

رات گہری ہے تو پھر غم بھی فراواں ہوں گے ساجدہ زیدی (1927-2011) رات گہری ہے تو پھر غم بھی فراواں ہوں گے کتنے بجھتے ہوئے تارے سر مژگاں ہوں گے قہر ہے ساعت محشر ہے کہ کہرام فنا خاک اس شہر فنا کوش میں انساں ہوں گے شہر ہو دشت ہو محفل ہو کہ…

پاپولر فیمنزم اور اشتہاری صنعت کا گٹھ جوڑ – وحید مراد

آجکل شمالی امریکہ اور مغربی یورپ کے پاپولر کلچر میں فیمنزم کے نام پر بہت سی چیزیں گردش کر رہی ہیں۔ آپ کسی روڈ، بازار یا گلی کی طرف مڑیں، آپ کو فیمنزم سے متعلق کوئی نہ کوئی چیز ضرور نظر آئے گی۔ فیمنزم کے نعروں سے مزین کوئی ٹی شرٹ، مووی،…