ڈیلی آرکائیو

2021-04-11

آج لبنانی نژاد امریکی مصنف،شاعر اور مصور جبران خلی…

آج لبنانی نژاد امریکی مصنف،شاعر اور مصور جبران خلیل جبران کا یوم وفات ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جبران 6 جنوری 1883ء کو مسیحی اکثریتی شہر بشاری میں پیدا ہوئے۔…

دن اک کے بعد ایک گزرتے ہوئے بھی دیکھ اک دن تو اپ…

دن اک کے بعد ایک گزرتے ہوئے بھی دیکھ اک دن تو اپنے آپ کو مرتے ہوئے بھی دیکھ ہر وقت کھلتے پھول کی جانب تکا نہ کر مرجھا کے پتیوں کو بکھرتے ہوئے بھی دیکھ ہاں دیکھ برف گرتی ہوئی بال بال پر تپتے ہوئے خیال ٹھٹھرتے ہوئے بھی دیکھ اپنوں میں…

سائنس کیا ہے؟ (28,آخری قسط)۔۔وہاراامباکر

کارل پوپر نے سوال اٹھایا تھا کہ سائنس اور سوڈوسائنس میں لکیر کہاں کھینچی جائے؟ انہوں نے اس کا ایک پہلا جواب دینے کی کوشش کی تھی جس کے مطابق کوئی ایک ایویڈنس کسی ہاپئوتھیسس یا تھیوری کو رد کرنے کی لئے کافی…

دماغ عرش پہ ہے خود زمیں پہ چلتے ہیں سفر گمان کا …

دماغ عرش پہ ہے خود زمیں پہ چلتے ہیں سفر گمان کا ہے اور یقیں پہ چلتے ہیں ہمارے قافلہ سالاروں کے ارادے کیا چلے تو ہاں پہ ہیں لیکن نہیں پہ چلتے ہیں نہ جانے کون سا نشہ ہے ان پہ چھایا ہوا قدم کہیں پہ ہیں پڑتے کہیں پہ چلتے ہیں ... More

قائد اعظم کا اسلام (2)۔۔خورشید ندیم

تفہیمِ مذہب ایک مسلسل عمل ہے۔ ارتقا اس کا خاصہ ہے اور تعبیرات کا تعدد نتیجہ۔ان تعبیرات سے ایک ”تاریخی مذہب‘‘ وجود میں آتا ہے۔ تاریخی مذہب، مذہب کے بنیادی ماخذ اور اس کی تفہیم کا مجموعہ ہوتا ہے۔ ہر مذہب…

“ ادیب کی محبوبہ “ راجہ مہدی علی خان کی دلچسپ مزا…

“ ادیب کی محبوبہ “ راجہ مہدی علی خان کی دلچسپ مزاحیہ نظم جس میں ۲۵ سے زائد شاعروں اور ادیبوں کا ذکر خوب صورتی سے کیا گیا ہے ... تمہاری الفت میں ہارمونیم پہ میرؔ کی غزلیں گا رہا ہوں بہتر ان میں چھپے ہیں نشتر جو سب کے سب آزما رہا ہوں بہت…

مارس پرسیورنس خلائی مشن کا ہیلی کاپٹر مریخی دھول م…

مارس پرسیورنس خلائی مشن کا ہیلی کاپٹر مریخی دھول مٹی پر پنجے گاڑے اڑان کے لیے تیار کھڑا ہے، ناسا نے 14 اپریل 2021ء کو اس کی پہلی اڑان کا اعلان کیا ہے۔ یہ تصویر آج پرسیورنس خلائی گاڑی نے کچھ دیر پہلے ناسا ہیڈ کوارٹر کو بھیجی ہے۔ مریخ پر…

گزرے جو اپنے یاروں کی صحبت میں چار دن اے جی جوش …

گزرے جو اپنے یاروں کی صحبت میں چار دن اے جی جوش گزرے جو اپنے یاروں کی صحبت میں چار دن ایسا لگا بسر ہوئے جنت میں چار دن عمر خضر کی اس کو تمنا کبھی نہ ہو انسان جی سکے جو محبت میں چار دن جب تک جیے نبھائیں گے ہم ان سے دوستی اپنے رہے جو دوست…