ڈیلی آرکائیو

2021-04-23

ہارو کی مورا کامی سے "کافکا بر لبِ ساحل” ناول کے ذ…

ہارو کی مورا کامی سے "کافکا بر لبِ ساحل" ناول کے ذریعے میری پہلی ملاقات ہوئی ہے اور خاصی دلچسپ رہی ہے۔ ناول طلسماتی واقعات، جنسی معاملات، نفسیاتی الجھنوں، روحانی روابط، مافوق الفطرت اورعجیب الخلقت مخلوق سے اٹا ہوا ہے لیکن بوریت سے کوسوں…

” علامہ اقبال کی شاعری اسلامی افکار کا تاج محل ہے…

'' علامہ اقبال کی شاعری اسلامی افکار کا تاج محل ہے، جس طرح تاج محل کی پچے کاری، مرصع کاری اور مینا کاری میں مسلمانوں کے ذہن کی کارفرمائی نظر آتی ہے اسی طرح علامہ محمد اقبال کی شاعری کے گنبد مینائی پر اور اسلام کے افکار کی کوکبی اور…

کتاب کے عالمی دن کے موقع پر، عبد المجید قریشی صاحب…

کتاب کے عالمی دن کے موقع پر، عبد المجید قریشی صاحب کی کتاب " کتابیں ہیں چمن اپنا " سے ایک تحریر احباب کی نظر : ••••••••••••••• بابائے کتب خانہ مولوی خدا بخش۔۔!! خان بہادر مولوی خدا بخش مرحوم نے پٹنے میں، " خدا بخش اورنٹیل لائبریری " جیسے…

چہرہ ہے کہ انوارِ دو عالم کا صحیفہ آنکھیں ہیں کہ…

چہرہ ہے کہ انوارِ دو عالم کا صحیفہ آنکھیں ہیں کہ بحرینِ تقدس کے نگیں ہیں ماتھا ہے کہ وحدت کی تجلی کا ورق ہے عارِض ہیں کہ ”والفجر“ کی آیت کے اَمیں ہیں گیسو ہیں کہ ”وَاللَّیل“ کے بکھرے ہوئے سایے ابرو ہیں کہ قوسینِ شبِ قدر کھُلے ہیں گردن…

ابو طالب کے ساتھ ایک دن: رسول! آؤ، آج تمہیں اپنی …

ابو طالب کے ساتھ ایک دن: رسول! آؤ، آج تمہیں اپنی زندگی کے دو خاص دنوں کی کہانی سناؤں،،، یہ ہیں انتہائی خوشی اور انتہائی غم کے دن۔۔ اس میں کوئی شک نہیں رسول کی میری زندگی میں ایسے بہت سارے دن آئے ہیں جو خوشی کے دن تھے، مسرت کے دن تھے۔ میں…

مرا جنونِ وفا ہے زوال آمادہ شکست ہو گیا تیرا فسون…

مرا جنونِ وفا ہے زوال آمادہ شکست ہو گیا تیرا فسونِ زیبائی ان آرزوؤں پہ چھائی ہے گردِ مایوسی جنہوں نے تیرے تبسّم سے پرورش پائی فریبِ شوق کے رنگیں طلسم ٹوٹ گئے حقیقتوں نے حوادث سے پھر جِلا پائی سکون و خواب کے پردے سرکتے جاتے ہیں دماغ و دل…

بھینس بڑی کہ عقل؟۔۔رؤف کلاسرا

مکالمہ 11 April 2021ء یہ تحریر 981 مرتبہ دیکھی گئی۔ دنیا کیا سے کیا ہو گئی کہ عمران خان اور جہانگیر ترین‘ جو ہر وقت اکٹھے جہاز پر سوار رہتے تھے‘ اچانک لڑ پڑے ہیں۔ یہ جہاز…

آہ مولانا وحید الدین خان صاحب: بے حد احترام اور کچھ اختلاف بھی – میر امتیاز آفریں

عام طور پر دینی شخصیات پر رائے قائم کرتے وقت ہم اعتدال و توازن برقرار نہیں رکھ پاتے، اگر زیر بحث شخصیت اپنی ہو تو ہم اسے تقریباً معصوم عن الخطا سمجھ کر آسانی سے شخصیت پرستی کے مرض میں مبتلا ہوجاتے ہیں اور اگر شخصیت مخالف مکتبہ فکر سے…