ڈیلی آرکائیو

2021-06-26

درد کے سیپ میں پیدا ہوئی بیداری سی رات کی راکھ …

درد کے سیپ میں پیدا ہوئی بیداری سی رات کی راکھ میں سلگی کوئی چنگاری سی دیکھئے شہر میں کب بادِ یقیں چلتی ہے کو بہ کو پھیلی ہے اوہام کی بیماری سی موت کا وار تو میں سہہ گیا ہنستے ہنستے زندگی! تو ہی کوئی چوٹ لگا کاری سی کیا سے کیا ہو…

شفیق خلؔش دُعا میں اب وہ اثر کا پتہ نہیں چلتا ک…

شفیق خلؔش دُعا میں اب وہ اثر کا پتہ نہیں چلتا کُچھ التفاتِ نظر کا پتہ نہیں چلتا اُتر کے خود سےسمندر میں دیکھنا ہوگا کہ ساحلوں سے بھنور کا پتہ نہیں چلتا خیال یار میں بیٹھے ہُوئے ہمَیں اکثر گُزرتے شام و سحر کا پتہ نہیں چلتا نظر میں…

جب فائز گھر آئے گا۔۔روبینہ فیصل

آج سے 14سال پہلے جب افضال خاندان نے پاکستان کو چھوڑنے کا سوچا ہو گا تو وہاں موجودکرپشن،منافقت، تعصب،مذہبی شدت پسندی اور بچوں کی جان و مال کی حفاظت کے حوالے سے تنگ آکر ہی سوچا ہو گا۔ جیسا ہم سب ہجرت کر نے والے سوچتے ہیں۔ کون ہے جو…

(A POEM IN FOUR VERSIONS)۔۔ڈاکٹر ستیہ پال آنند

A POEM IN FOUR VERSIONS, URDU, ENGLISH, FRENCH, AND SPANISH. THE WOMAN WITH SHAVED HEAD( یہ نظم پہلے انگریزی میں اسی عنوان سے لکھی گئی اور شاعر کی انگریزی کتابThe Sunset Strands میں شامل ہے) وہ بھی چپ رہتی تھی اکثرمیں بھی باتونی نہیں…