ڈیلی آرکائیو

2021-07-25

افغانستان: اندیشے اور امکانات ۔۔۔ رعایت اللہ فاروقی

افغان سٹوڈنٹس افغانستان کے زمینی راستوں اور دروازوں کا تیزی سے کنٹرول حاصل کرتے جا رہے ہیں۔ تاجکستان سے جڑنے والے بندر شیر خان کے بعد آج انہوں نے چائنا سے ملنے والا واخان کوریڈور بھی اپنے کنٹرول میں لے…

ہوائیں تیز تھیں، یہ تو فقط بہانے تھے سفینے یوں بھ…

ہوائیں تیز تھیں، یہ تو فقط بہانے تھے سفینے یوں بھی کنارے پہ کب لگانے تھے خیال آتا ہے رہ رہ کے لوٹ جانے کا سفر سے پہلے ہمیں اپنے گھر جلانے تھے گمان تھا کہ سمجھ لیں گے موسموں کا مزاج کُھلی جو آنکھ تو زد پر سبھی ٹھکانے تھے ہمیں بھی آج…

ابھی ضد نہ کر، دل بے خبر کہ پس ہجوم ستم گراں ! ا…

ابھی ضد نہ کر، دل بے خبر کہ پس ہجوم ستم گراں ! ابھی کون تجھ سے وفا کرے؟ ابھی کس کو فرصتیں اس قدر کہ سمیٹ کر تیری کرچیاں تیرے حق میں خدا سے دعا کرے ! ابھی ضد نہ کر دل بے خبر کہ تہ غبار‌ غم جہاں ! کہاں کھو گئے تیرے چارہ گر کہ راہ حیات میں…

پا رلیما ن اور عمران خا ن

سیدتابش الوریبرطانوی پارلیمنٹ کو دنیا بھر میں پارلیمنٹ کی ماں کا درجہ حاصل ہے جسے آ ئینی و انتظامی ا ختیارات کے اعتبار سے مطلق العنان ادارہ سمجھا جاتا ہے اس کی مطلق العنا نی کی کوئی تعریف و تشریح موجودنہیں نہ کوئی ایسا ایکٹ

برطانوی وظیفہ خواری سے امریکی وظیفہ خواری تک۔۔خالد مسعود خان

ہمیں آنے والے وقت کی مشکلوں کا رتی برابر احساس نہیں اور ہم اس بات پر خوش ہیں کہ امریکہ رات کے اندھیرے میں بگرام ایئر بیس سے بتیاں بند کر کے بلا اطلاع بھاگ گیا ہے۔ حالات کی سنگینی کا احساس کرنے کے بجائے…

قصہ وِیپنگ وِلّو کا ۔ اور میرا۔۔۔ڈاکٹر ستیہ پال آنند

’ٗٗقصّے سناتے رہو کہ لوگ شاید سوچ بچار کریں ۔‘‘قال الملاٗرکوع ۱۱، الاعراف ۶، (القران) پہلا قصہبارش ہے اور میں ویپنگ وِلّو کے ساتھ جُڑا بیٹھا ہوںٹپ ٹپ اشک بہاتی وِلّو، اور میں، دونوںبچپن سے اک سنگ رہے…

افغانستان……کرنے کے کام | Khabrain Group Pakistan

وزیر احمد جوگیزئیافغانستان کی صورتحال میں دن بدن تیزی کے ساتھ تبدیلیاں آرہی ہیں،ہردن کوئی نہ کوئی نئی پیشرفت ضرور ہوتی ہے،افغانستان کی صورتحال سے پاکستان کو بھی علیحدہ نہیں رکھا جاسکتا ہے۔کیونکہ اس صورتحال کے پاکستان پر بھی

غربت کا کیسے خاتمہ ہو سکتا ہے

ڈاکٹر عمرانہ مشتا قریاست مدینہ کے حقیقی خد و خال کا جائزہ لیا جائے تو ہم اس نتیجے پر پہنچتے ہیں کہ مثالی معاشرہ کی تشکیل میں ریاست مدینہ ہی حقیقی مثالی معاشرہ کا آئینہ ہے جس میں کوئی فرد بھوکا نہیں رہ سکتا اور نہ ہی کوئی