ڈیلی آرکائیو

2021-07-30

ایٹم بم سے زیادہ خطرناک

خیر محمد بدھپاکستان آبادی کے لحاظ سے دنیا کا چھٹا بڑا ملک ہے بھارت، امریکہ، انڈونیشیا اور برازیل کے بعد پاکستان بہت زیادہ آبادی والا ملک ہے۔ جولائی 2019ء میں ملک کی آبادی بائیس کروڑ اکیاون لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے اس وقت ایک

ہمارا ڈی این اے ہمارے ارتقاء کا منہ بولتا ثبوت ہے۔۔ترجمہ و تلخیص: قدیر قریشی

یہ تو آپ نے سن ہی رکھا ہو گا کہ great apes یعنی چمپنزی اور گوریلا وغیرہ انسان کے انتہائی قریبی ارتقائی کزنز ہیں- ڈاورن سے پہلے بھی سائنس دان یہ جانتے تھے کہ جسمانی خدوخال اور ساخت کے نکتہ نظر سے چمپننزی…

افغانستان خطے کیلئے ابھرتا سکیورٹی چیلنج۔۔ڈاکٹر ندیم عباس

کچھ عرصہ پہلے چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل ڈاکٹر قبلہ ایاز صاحب سے بات ہوئی، وہ افغانستان کے حوالے سے بہت فکر مند تھے۔ افغانستان کے لوگ اب جنگ کے عادی ہوچکے ہیں، ایک طاقت جائے دوسری آئے یا تیسری آجائے،…

ہست اور نیست۔۔ڈاکٹر ستیہ پال آنند

(ایک)پس منظر سانپ کے ڈسنے سے جب آنند نیلا پڑ گیا، توبھکشوؤں نےماتمی چادر سے اس کو ڈھک دیا تھاپھر یکا یک اُس نے آنکھیں کھول دیں تھیںاور واپس آ گیا تھازندہ لوگوں کے جہاں میںمعجزہ تھاسارے بھکشوسوُتروں کا جاپ کرنے لگ گئے تھے۔(یوں…

فیمنسٹ الہیات : مذاہب کی تبدیلی و تحریف کا پروجیکٹ (1) – وحید مراد

تانیثی الہیات (Feminist Theology) پر بیسویں صدی کے اوائل سے ہی کام ہورہا تھا لیکن اس نام سے باقاعدہ تحریک کا آغاز ساٹھ کے عشرے میں ا س وقت ہوا جب امریکی ماہر الہیات ویلری سیونگ (Valerie Saiving) کا ایک مضمون ‘انسانی…

تنخواہ، مہنگائی اور عوام الناس

ڈاکٹر عاصم ثقلینکل ایک اٹھارہ گریڈ کے پروفیسر نے میرے سامنے انتہائی دُکھ کے ساتھ اس بات کا اظہار کیا کہ اس سال میں قربانی نہیں کرسکاکیونکہ اگر قربانی کرتاتو بقیہ تنخواہ سے اگست تک کے تمام اخراجات کس طرح پورے ہوتے۔ صاحب فرما

دورِ حاضر کی ’’روشن خیالی کا خالق‘‘ ، جان سٹورٹ مِل، ایک تعارف۔۔ادریس آزاد

ہم فی زمانہ حقوق ِ انسانی، حقوقِ نسواں، تحفظ حیوانات، تحفظِ ماحولیات کے جس قدر بھی نعرے سنتے ہیں، جتنے قوانین اور دساتیر دیکھتےہیں اور جس قدر لبرل ازم سے ہماری واقفیت ہے اس کا زیادہ تر حصہ مِل کے فلسفہ سے نمودار ہورہاہے۔ جان سٹورٹ مل…

غیرت صرف یہ نہیں ۔۔روبینہ قریشی

میں شاید ایف ایس ای میں تھی یہ وہ دن ہوا کرتے تھے جب امتحانات میں خبرنامہ بھی اچھا لگتا تھا ایک دن میں خبرنامہ دیکھ رہی تھی کہ مقبوضہ کشمیر کی ایک خبر تھی اور فوٹیج میں دکھایا جا رہا تھا کہ ایک معصوم سے کشمیری بچے کو بھارتی پولیس…

​ موت کی آندھی – ایک غصیلی نظم۔۔ڈاکٹر ستیہ پال آنند

بد صورت، مکروہ چڑیلوںکی مانند گلا پھاڑتی، بال نوچتیدھاڑیں مارتی، چھاتی پیٹتیباہر ایک غصیلی آندھیپتے، شاخیں، کوڑ کباڑ، کتابیں اپنے ساتھ اڑاتی مُردہ گِدھوں کے پنجوں سے جھٹک جھٹک کرزندہ حیوانوں سے ان کی جان…