ڈیلی آرکائیو

2021-09-12

آہ مفتی جعفر حسین قبلہ-سینوں سے سنگینوں کا ٹکراؤ۔۔نذر حافی

1980ء کی دہائی تھی، ملک پر مارشل لاء کا بھوت سوار تھا۔ حکومتی اداروں پر آمریتی دیو قابض تھے۔ جمہوری اقدار کو بھاری بھرکم بوٹوں تلے روند دیا گیا تھا۔ خونخوار ڈکٹیٹر کو ہر روز ایک نئے شکار کی تلاش رہتی تھی۔ اتنے میں 20 جنوری 1980ء…

دونظمیں ۔۔ڈاکٹر ستیہ پال آنند

دوستو: میں غالب کے کلیدی اشعار کو یورپی اور امریکی جامعات میں مستعمل طریق کارVirtual Textual Analysis کی رو سے منظوم تشریح و تفسیر و دید بافی کے عمل سے گذار رہا ہوں۔ اب تک تیس نظمیں ہو چکی ہیں۔ ان میں سے…

پچاس بر س پرانی ایک نظم/ساحل ِ بنگال پر(لایعنیت کی شاعری کا ایک نمونہ )۔۔ڈاکٹر ستیہ پال آنند

ایک لڑکا سر کے بل ایسے کھڑاہےنرم گیلی ریت پر، جیسے اسےآکاش کی اونچائی میں پانیسمندر کی اتھاہ گہرائی میں آکاشساحل پر جمے لوگوں کے جمگھٹسب کو اُلٹا دیکھنا ہے۔ ایک چوزہ، سر کٹا ، جونزع کے عالم میں گیلی ریت…

راغب ہو کہاں دِل نہ جو مطلب ہو خُدا سے جب کیفیت ا…

راغب ہو کہاں دِل نہ جو مطلب ہو خُدا سے جب کیفیت ایسی ہو، تو کیا ہوگا دُعا سے کب راس رہا اُن کو جُداگانہ تشخّص! رافِل رہے ہر اِک کو وہ، گفتار و ادا سے تقدیر و مُکافات پہ ایمان نہیں کُچھ جائز کریں ہر بات وہ آئینِ وَفا سے ہر نعمتِ قُدرت…