ڈیلی آرکائیو

2021-10-04

غم کہ تھا حریفِ جاں اب حریفِ جاناں ہے اب وہ زلفِ …

غم کہ تھا حریفِ جاں اب حریفِ جاناں ہے اب وہ زلفِ برہم ہے، اب وہ چشمِ گریاں ہے وسعتوں میں دامن کی ان دنوں گریباں ہے ہم نفس کہیں شاید موسمِ بہاراں ہے رنگ و بُو کے پردے میں کون یہ خراماں ہے ہر نفس معطر ہے ہر نظر غزل خواں ہے بندگی…

جب درختوں نے کنٹرول سنبھالا۔۔وہاراامباکر

بیالیس کروڑ سال قبل، ڈینووین دور کی ابتدا میں، پودوں نے زمین کو بھرنا شروع کیا تھا۔ یہ چھوٹے سے تھے جیسا کہ کائی۔ چند انچ سے زیادہ بڑے شاذ و نادر ہی ہوتے تھے۔ لیکن چھ کروڑ سال بعد، ڈینووین دور کے اختتام…

طالبان کی آمد اور بھارت کی گرم سرد پھونکیں۔۔ثاقب اکبر

افغانستان میں طالبان کی حکومت کے قیام کے حوالے سے مختلف ملکوں، قوموں اور مذہبوں سے تعلق رکھنے والے مختلف انداز سے تبصرے کر رہے ہیں۔ ہر ایک کا اپنا اپنا تناظر ہے اور اپنے اپنے مفادات۔ خود طالبان نے بھی لوگوں کو اپنے بارے میں سوچنے…

نام نہاد ڈیورنڈ لائن: جمعہ خان صوفی کی کتاب – راجہ قاسم محمود

جمعہ خان صوفی پاکستانی پختون سیاست دان ہیں۔ جو سیاست سے تو شاید ریٹائر ہو چکے ہیں مگر پاکستان کی سیاست بالخصوص افغان امور کے بارے میں بہت سے رازوں سے انہوں نے “فریب ناتمام” نامی کتاب لکھ کر پردہ اٹھایا ہے۔ “نام نہاد…

پروفیسر ہود بھائی اور حجاب۔۔محمد وقاص رشید

ایک ہی گھر میں ایک ہی والدین کی اولاد ہوتے ہوئے بھی بہن بھائیوں کی سوچ آپس میں ایک جیسی نہ ہونا ایک عمومی مشاہدہ ہے ، یہ کوئی اچنبھے کی بات نہیں  لیکن وہ ایک خاندان بن کر والدین کی نسبت سے جڑے اختلافات سمیت ایک ہی چھت تلے رہتے ہیں ۔…

بابا۔۔اقتدار جاوید – مکالمہمکالمہ

بر سبیلِ تذکرہ ملکِ چین کا ذکر ہوا تو ایک طالبہ نے کہا: بابے تو چین میں ہوتے ہیں۔ ہم سب حیران ہو کر اس کو دیکھنے لگے۔ اس نے کہا: بابا وہ ہوتا ہے جو آپ کا‘ خاندان کا‘ گھر والوں کا‘ شہر کا‘ ملک کا‘ اپنی…

دل والے زندگی جی جائیں گے – خبیب کیانی

صاحب بات یہ ہے کہ ہمارے ملک میں نوکریوں کی کمی تو ہے لیکن روزگار کی بالکل بھی نہیں!! سادہ سی طبیعت کے نثار خان کی زبان سے ادا ہونے والا یہ جملہ کافی پیچیدہ تھا۔ میں نے جھٹ سے سوال رکھا کہ بھائی یہ تم کیسے کہ سکتے ہو؟ نثار…