راغب مراد آبادی کی وفات Jan 18, 2011 راغب مراد آب…

راغب مراد آبادی کی وفات Jan 18, 2011 راغب مراد آبادی کا اصل نام اصغر حسین تھا۔ راغب تخلص کرتے تھے۔ 27 مارچ 1918ء(13 جمادی الثانی 1336ھ) میں دلی میں پیدا ہوئے۔ وطن مراد آباد تھا۔ ہندوستان میں دہلی کالج سے بے اے کیا۔ قیام پاکستان کے بعد…

بات کچھ سُوجھی نہیں ھے ، تجھ سے کہنے کے لیے یہ تحی…

بات کچھ سُوجھی نہیں ھے ، تجھ سے کہنے کے لیے یہ تحیر بھی بہت ھے ، زندہ رھنے کے لیے آؤ بے سوچے ، زمانے بھر کی ھم باتیں کریں عمر تو ساری پڑی ھے ، کچھ نہ کہنے کے لیے ”ن .م. راشد“ بشکریہ https://www.facebook.com/Inside.the.coffee.house

ناصر کاظمی آہ پھر نغمہ بنا چاہتی ہے خامشی طرزِ اد…

ناصر کاظمی آہ پھر نغمہ بنا چاہتی ہے خامشی طرزِ ادا چاہتی ہے آج پھر وُسعَتِ صحرائے جنُوں پُرسِشِ آبلہ پا چاہتی ہے دیکھ کیفیّتِ طُوفانِ بہار بُوئے گُل رنگِ ہَوا چاہتی ہے موت آرائشِ ہستی کے لیے خندۂ زخمِ وَفا چاہتی ہے دِل میں اب خارِ…

یادِ ماضی عذاب ہے یا رب چھین لے مجھ سے حافظہ میرا…

یادِ ماضی عذاب ہے یا رب چھین لے مجھ سے حافظہ میرا ....اختر انصاری ؔ سینہ خوں سے بھرا ہوا میرا اُف یہ بد مست مے کدہ میرا نا رسائی پہ ناز ہے جس کو ہائے وہ شوقِ نا رسا میرا عشق کو منہ دکھاؤں گا کیونکر ہجر میں رنگ اڑ گیا میرا دلِ غم دیدہ…

”مِری محبت جواں رھے گی“ مثالِ خورشید و ماہ و انجم…

”مِری محبت جواں رھے گی“ مثالِ خورشید و ماہ و انجم مِری محبت جواں رھے گی عروسِ فطرت کے حُسنِ شاداب کی طرح جاوداں رھے گی شعاعِ اُمید بن کے ، ھر وقت رُوح پر ضو فشاں رھے گی شگفتہ و شادماں کرے گی شگفتہ و شادماں رھے گی میری محبت جواں رھے…

کون کسی کا یار ہے سائیں – راغب مراد آبادی کون کسی…

کون کسی کا یار ہے سائیں - راغب مراد آبادی کون کسی کا یار ہے سائیں یاری بھی بیوپار ہے سائیں یہ بھی جھوٹا، وہ بھی جھوٹا جھوٹا سب سنسار ہے سائیں ہم تو ہیں بس رمتے جوگی آپ کا تو گھر بار ہے سائیں کب سے اُس کو ڈھونڈ رہا ہوں جس کو مجھ سے…

”حَسن کُوزہ گر“ سے ایک ٹکڑا۔ تیرے جیسی عورتیں، جہ…

”حَسن کُوزہ گر“ سے ایک ٹکڑا۔ تیرے جیسی عورتیں، جہاں زاد !! ایسی اُلجھنیں ھیں جن کو آج تک کوئی نہیں ، سُلجھ سکا جو میں کہوں کہ میں سُلجھ سکا تو سر بسر فریب اپنے آپ سے کہ عورتوں کی ساخت ھے وہ طنز اپنے آپ پر جواب جس کا ھم نہیں…

نظام رامپوری : انگڑائی بھی وہ لینے نہ پاے اٹھا کے …

نظام رامپوری : انگڑائی بھی وہ لینے نہ پاے اٹھا کے ہاتھ انگڑائی بھی وہ لینے نہ پاے اٹھا کے ہاتھ دیکھا جو مجھ کو چھوڑ دے مسکرا کے ہاتھ یہ بھی نیا ستم ہے حنا تو لگایں غیر اور اسکی داد چاہیں وہ مجھ کو دکھا کے ہاتھ قاصد ترے بیان سے دل ایسا…

”اظہار اور رسائی“ سے ایک ٹکڑا۔ مُو قلم ، ساز، گلِ…

”اظہار اور رسائی“ سے ایک ٹکڑا۔ مُو قلم ، ساز، گلِ تازہ ، تِھرکتے پاؤں بات کہنے کے بہانے ھیں بہت آدمی ، کس سے مگر بات کرے ؟؟ بات جب حیلۂ تقریبِ ملاقات نہ ھو اور رسائی کہ ھمیشہ سے ھے کوتاہ کمند بات کی غایتِ غایات نہ ھو ایک ذرّہ کفِ…

منٹو کی آج برسی کی مناسبت سے نامی انصاری کی ایک نظ…

منٹو کی آج برسی کی مناسبت سے نامی انصاری کی ایک نظم "مرگ چمن" آپ کی نذر... "مرگ چمن" شاخ گل ٹوٹ گئی،موج صبا رقصاں ہے مرگ منٹو سے یہاں روح ادب نوحہ کناں اک ستارہ کہ حوادث نے جسے پالا تھا اک مفکر کہ بدلنا تھا جسے نظم چمن ہائے وہ رند، کہ…

Hey there!

Forgot password?

Don't have an account? Register

Forgot your password?

Enter your account data and we will send you a link to reset your password.

Your password reset link appears to be invalid or expired.

Close
of

Processing files…